001- سروے

السلام علیکم ورحمۃ اللہ!
مُعزّز قارئینِ کرام !۔ ۔ ہم نے اپنے ون اردو اراکین سے۔ ۔کھیلوں سے متعلق سروے کیا۔ ۔جس میں ممبران نے بہت دلچسپی سے شرکت کی۔ ۔ ۔ہمارے پوچھے گئے سوالات۔ ۔اور ممبران کے جوابات حاضرِ خدمت ہیں۔ ۔ ۔

سوالات:
1: آپ کا پسندیدہ کھیل کون سا ہے۔ ۔؟
2: ان ڈور گیمز پسند ہے؟۔ ۔یا آؤٹ ڈور۔ ۔؟
3: اپنے پچپن میں کون سے کھیل کھیلے تھے؟۔ ۔ ۔
4: کیا کبھی کھیل کے دوران کوئی چوٹ وغیرہ لگی؟۔ ۔ ۔
5: کھیلتے ہوئے کبھی دوسرے بچوں کی پٹائی کی؟۔ ۔ ۔
6:چیٹنگ کی ہے کبھی کھیل میں؟۔ ۔
7: کون سے کھیل ہیں۔ ۔جو صرف دیکھنے کی حد تک پسند ہے۔ ۔؟

سعدیہ محمّد (ماڈریٹر )

1: کرکٹ، بیڈمنٹن، لڈو

2: دونوں

3: بچپن میں بہت سے کھیل کھیلے
اب ان کے نام پنجابی میں ہیں سوائے ایک کے۔
لڈو کھیلی، شٹاپو، پٹھو گرم، گلی ڈنڈا، کسی حد تک کرکٹ بھی۔

4: بالکل جی۔۔۔ کالج میں والی بال کھیلنے کی کوشش کی تھی
ابھی پہلی ہی سروس کروائی تھی کہ انگلی کا ناخن ٹوٹ گیا اور ہاتھ بھی سوج گئے اس لیے اس کے بعد، والی بال کھیلنے سے توبہ کر لی۔

5: بچپن میں کی تھی جو بچے روندلے ہوتے تھے ان کی۔

6: نہیں۔۔۔۔ کھیل میں چیٹنگ کا مزہ نہیں آتا۔

7: کرکٹ۔

ٹرومین۔۔۔پی کے (مشنری ممبر)

1: کرکٹ۔ جنون کی حد تک شوق ہے کرکٹ کھیلنے کا ۔ ۔ میں تو آفس سے بھی غائب ہو جاتا ہوں جب میرا اپنا میچ ہو۔ ۔ کھیلنا اور دیکھنا دنوں کام پسند ہیں ۔ ۔ ۔ ۔

2: آوٹ ڈور۔ ۔ ۔ ۔ ویسے ان ڈور بھی کرکٹ ہی کھیلی ہے ۔ ۔ ہم اسے چھوٹی کرکٹ کہتے تھے۔ ۔ بچپن کی بات ہے۔

3: بچپن میں کرکٹ کے علاوہ گلی ڈنڈا اور کلی تھم تموسا "ہماری لوکل گیم تھی" بہت کھیلی ہے۔ ۔

4: ۔جی ہاں ۔ ۔ ایک بار ہارڈ بال فل ٹاس لگی تھی سر میں۔ ۔ ۔ ۔ میں بے ہوش ہو گیا تھا پھر کھلاڑی اٹھا کر اسپتال لے کر گئے تھے۔ ۔ ۔ ایک بار ہاتھ پر بھی لگا تھا ایکسٹرا باؤنس تھا پیچ میں اس لیے بال جج نہیں ہوا اور ہاتھ پہ لگ گیا پورا ہفتہ ریسٹ کرنا پڑا تھا۔ ۔ ۔ میں تو ٹائپنگ بھی نہیں کر سکتا تھا۔ ۔ ۔

5 : جی ایک دو بار کی۔ ۔ ۔ جب چھوٹے آوٹ کر لیتے ہیں تو غصے میں ایک دو بار کی۔ ۔ ویسے یہ کام صرف اپنے گھر کے گراؤنڈ مطلب صحن میں کیا۔ ۔ ۔ کیوں کہ چھوٹے بچوں کے ساتھ تو وہیں پہ کرکٹ کھیلی تھی ۔ ۔ ۔ ۔

6: چیٹنگ بہت زیادہ کی ہے۔ ۔ ۔ اصل میں جب کوئی آؤٹ کرلے اور اسے جج ہو تو سوال ہی پیدا نہیں ہوتا کہ میں مان لوں۔ ۔ ویسے ایک دو بار مخالف ٹیم کی پیچ بھی جا کر خراب کی لڑائی وغیرہ میں۔ ۔ ہی ہی ہی ۔ ۔ ۔۔ کیا یادیں ہیں جی۔ ۔ اب تو سب ماضی ہو گیا ۔ ۔

7: ہاکی اور فٹ بال۔ ۔ ہاکی میں صرف پاکستان کا میچ دیکھنے کا شوق ہے۔ ۔ البتہ فٹ بال کھیلتا تو نہیں کرکٹ کی طرح لیکن دیکھنے کا اس کا بھی جنون کی حد تک شوق ہے۔ ۔ جب سے ہوش سنبھالا کوئی اہم میچ نارمل حالات میں مس نہیں کیا ۔ ۔ ۔

سحر آزاد (اوور سیز ممبر)

1:فٹبال۔

2: آوٹ ڈور۔ گیمز زیادہ پسند ہیں۔

3: جڈو، تائی کوانڈو، فٹ بال، کشتی اور کنگ فو، مگر کنگ فو زیادہ نہیں سیکھی۔

4: بہت مرتبہ۔

5: یہ ہمارے کھیل کا حصہ تھا۔

6: بہت بار۔

7: انگریزی ریسلنگ۔

ھما تنویر (ماڈریٹر گوشۂ خواتین)

1: کرکٹ پسندیدہ ترین ہے۔ کچھ اور کھیل بھی پسند ہیں۔
جیسے بیڈمنٹن، ٹینس۔
کبھی ھاکی اور سکواش بھی بہت پسند تھے۔ جب پاکستان ان کھیلوں میں چمپین تھا تب۔

2: دونوں ہی۔

3: کرکٹ، بیڈمنٹن ٹینس یہ تینوں بہہہت کھیلے ہیں۔
اس کے علاوہ لڈو، سنیکس اینڈ لاڈر، کیرم، کارڈز اور ڈاٹس بھی بہہہت کھیلتے تھے۔
پکڑن پکڑائی، چھپن چھپائی، پٹھو گول گرم، سٹاپو جیسے کھیل بھی بہہہت کھیلے۔

4: بہہہت بار۔

5: نہیں، کبھی نہیں۔

6: بہہہت بار۔ ھاھاھاھاھ

7: ہاکی، سکواش، سنوکر۔

پردیسی (گولڈ ممبر)

1: کرکٹ۔

2: آؤٹ ڈور۔

3: کرکٹ، ہاکی، گُلی ڈنڈا اور پتنگ بازی۔

4: ایک دفعہ کرکٹ کھیلتے ہوئے باؤنسر لگا تھا چہرے پر لیکن الحمدللہ زیادہ چوٹ نہیں آئی۔

5: نہیں کبھی نہیں بڑا شریف بچہ تھا۔

6: کھیل میں چیٹنگ کی تو پھر کھیل تو نہ رہا۔

7: wrestling

اداس آدمی (رجسٹرڈ یوزر)

1: سب سے زیادہ کرکٹ۔

2: دونوں ہی۔

3: کرکٹ، ہاکی، فٹ بال تاش سنوکر وغیرہ۔

4: کئی دفعہ، بلکہ میری تو ریڑھ کی ہڈی بھی فارغ ہو جانی تھی۔ پر اللہ کا شکر ہے بچ گئی ایک لمبے علاج کے بعد ۔

5: کبھی نہیں صرف ایک دفعہ ہاتھ اٹھایا تھا پر روک دیا۔

6: نہیں یہ کام مجھے سخت ناپسند ہے اور خاص کر کھیل میں۔

7: بل فائٹنگ۔

کاظمی ( گولڈ ممبر)

1: ہاکی، فٹ بال، شطریج، سکریبلز۔

2: دونوں طرح کے۔

3: ہاکی، فٹ بال، شطرنج، سکریبلز، پول والٹ، 100میٹر سپرنٹ، بیڈ منٹن۔

4: بے شمار، کبھی کھیل کے دوران اور کبھی کھیل کے بعد (یعنی گھر والوں سے)۔

5: نہیں۔

6: نہیں۔

7: باکسنگ، سوئمنگ، فینسنگ۔

خسرو (ماڈریٹر )

1: کرکٹ۔

2: آؤٹ ڈور گیمز ہی پسند ہیں۔

3: کرکٹ، کبڈی، فٹ بال، والی بال، آنکھ مچولی اور بھی پتہ نہیں کیا کیا۔ اب تو نام بھی یاد نہیں۔

4: ایک بار کرکٹ کھیلتے ہوئے لگی تھی۔ اور وہ اس طرح کہ رن لیتے وقت میں اور میرا ساتھی اس طرح اندھا دھند دوڑے کہ آپس میں ہی ٹکرا گئے۔ اس کے بیٹ سے میرے ٹخنے میں سخت چوٹ لگی تھی۔ وہ تو فوراً اٹھ کر کسی طرح کریز تک پہنچ گیا لیکن میں چوٹ کے باعث زیادہ تیزی نہیں دکھا سکا اور بدقسمتی سے رن آؤٹ ہو گیا۔ یہ ان دنوں کی بات ہے جب ہم اپنے گھر کے سامنے موجود چھوٹے سے میدان میں بغیر جوتے اور پیڈ کے کھیلا کرتے تھے۔

5: ویسے تو نہیں لیکن جب کوئی کھیل میں بے ایمانی کرتا تھا تو پھر اسے بخشتا نہیں تھا۔

6: کبھی نہیں کی اور نہ ہی کرنے دیتا تھا کسی کو۔

7: کرکٹ کھیلنا بھی پسند ہے اور دیکھنا بھی۔ باقی کوئی خاص نہیں۔ ویسے فٹ بال کے میجز دیکھ لیتا ہوں۔

عثمان (رجسٹرڈ یوزر)

1: کرکٹ۔

2: دونوں۔

3: بہت سے مثلاً کرکٹ، گلی ڈنڈا، بنٹے، پٹھو گول گرم، چھپن چھپائی، وغیرہ وغیرہ۔

4: یہ تو پارٹ آف گیم ہے ہوتا ہی رہا لیکن اللہ کا شکر ہے کبھی زیادہ نہیں لگی۔

5: جی نہیں بہت اچھا بچہ ہوں میں ہاہاہا۔

6: میں عموماً چیٹنگ نہیں کرتا تھا/ہوں۔

Spider Solitaire hahah7:

طالعہ (مشنری ممبر)

1:بیڈ منٹن، چیکرز، لڈو، والی بال، ٹیبل ٹینس، ہینگ مین۔

2: دونوں۔ سردیوں میں انڈور، گرمیوں میں آؤٹ ڈور۔

3: ہاکی، کرکٹ، فٹبال، چیکرز، ہائیکنگ، سکریبل، لڈو، پٹھو گرم، کھو کھو یا گو گو، کوکلا، چھپاکی، نیلی پری آنا، چھپن چھپائی، پکڑن پکڑائی، گلی ڈنڈا، بنٹے، پتنگ بازی، گیٹے، آنکھ مچولی، گڈیاں پٹولے، پینگ جھولنا، (نام۔چیز۔جگہ)، کیرم بورڈ، (یسو۔ پنجو۔ ہار۔ کبوتر۔ ڈولی)، درختوں پر چڑھنا۔ چوزوں اور تیتروں کے ساتھ کھیلنا۔ (ہماری امی نے گھر میں مرغیاں اور تیتر پالے ہوئے تھے)۔
مندرجہ بالا گیمز میں سے اگر کوئی سمجھ نہیں آیا تو بلا جھجکے تفصیل پوچھ سکتے ہیں۔

4:بچپن میں ایک بار میری چھوٹی بہن نے کھیل کے دوران پیتل کی ایش ٹرے مجھے ماری جو میرے ماتھے پر لگی۔ اچھا خاصا خون بھی نکلا تھا۔ اس چوٹ کا نشان آج بھی میرے ماتھے پر ہے۔

5: نہیں بھئی۔ خود ہی مار کھا لیتے تھے۔

6: نہیں۔ چھپ کر کبھی نہیں کی۔ کبھی کبھی علی الاعلان کر ہی لیتے تھے۔

فٹبال۔ کرکٹ(اگر پاکستان کھیل رہا ہو تو)7:

سلمان سلو۔ ۔(رائٹرز سوسائٹی ممبر)

۔۔1: کرکٹ۔

۔2: آوٹ ڈور۔

۔3: کرکٹ، فٹبال، مناپولی، لڈو، کیرم بورڈ، ہاکی، ویڈیوگیمز۔

۔4: ہاں جی بہت، کافی چوٹیں آئیں تھی۔ ایک بار ہاتھ ٹوٹ گیا تھا۔۔

۔۔5: جی ہاں اکثر لڑائی ہوجاتی تھی خصوصاً کیرم بورڈ یا لڈو وغیرہ کھلیتے ہوئے۔

۔6: جی ہاں کیرم بورڈ، مناپلی، رسک، لڈو، کارڈز وغیرہ جیسے گیمز میں چیٹنگ کرلیتے تھے کبھی کبھار۔

۔7: کبڈی، گولف، سکواش، ٹیبل ٹینس۔

لمحے (رائٹرز سوسائٹی ممبر)

1: ٹینس اور اولمپکس میں ہونے والے تمام گیمز۔

2: دونوں۔

3: بہت سے گیمز کھیلیں ہیں ایک لمبی لسٹ ہے۔ ٹینس، کرکٹ، تھرو بال، فٹ بال، پکڑم پکڑائی، لڈو، ڈیٹیکٹو ڈیٹیکٹو، ہیلپ ہیلپ،کونا کونا، اونچ نیچ، چور سپائی، کیرم، مختلف طرح کی ریس جس کو ہم اپنی خالص اردو میں دوڑ کہتے ہیں اور بھی بہت کچھ یہ سب ہم کزنز اب بھی کھیلتے ہیں۔

4: بہت ابھی تک نشان ہے ایک دفعہ تو گر گئی تھی پکرم پکڑائی کھیلتے ہوئے۔

5: نہیں اس کی نوبت نہیں آئی۔

6: ھھھھم کبھی کبھی مگر سب کو پتا ہوتا ہے اور تھا کہ گیم چیٹنگ سے کھیلا جا رہا ہے سب یہ حرکتیں گیم کو اور تفریحی بنانے کے لئے کرتے تھے اور ہیں۔

7: اولمپکس۔