008 - نیوز : امان

آئی ٹی نیوز

1) اس سال امن کے نوبل انعام کے لیے "انٹرنیٹ" کی بھی نامزدگی ہوئی ہے۔ انٹرنیٹ کو اٹلی کے ایک جریدے "وائرڈ" نے نامزد کیا ہے اور نامزد کرنے کی وجہ انٹرنیٹ پر بحث و مباحثے کے ساتھ عالمی مفاہمت کا فروغ پانا ہے۔ اور اس نامزدگی کو ایرانی وکیل شیریں عبادی (نوبل انعام یافتہ سن 2003) اور نکولس نیگرو پونٹے (100 ڈالر لیپ ٹاپ والے منصوبے کے بانی) کی حمایت حاصل ہے۔ اس کے علاوہ اس نامزدگی کی حمایت میں قائم کی گئی تنظیم "انٹرنیٹ فار پیس" بھی سرگرم ہے۔

اب تک یہ فیصلہ نہیں ہوسکا اور نہ واضح ہے کہ اگر انٹرنیٹ جیت جاتا ہے تو انعام کون وصول کرے گا۔ یاد رہے کہ اس سال آٹھ اکتوبر کو امن کا نوبل انعام دیا جائے گا جو کہ چودہ لاکھ ڈالر ہے۔

2) مختلف ذرائع کے مطابق، چند ملٹی نیشنل کمپنیوں نے صدر پاکستان آصف علی زرداری کو استعمال شدہ کمپیوٹر (یوزڈ برانڈیڈ سسٹم) کی درآمد پر پابندی لگانے کی تجویز پیش کردی ہے۔ اور ذرائع کے مطابق اگلے بجٹ میں اس سلسلے میں کوئی نہ کوئی فیصلہ متوقع ہے۔ اس فیصلے کی وجہ استعمال شدہ کمپیوٹرز کا سستا ہونا اور عوامی سطح پر مقبول ہونا ہے۔ جس کی وجہ سے نئے سسٹم کی فروخت میں کمی واقع ہونا ہے۔ کاروباری حلقے میں تاجران نے اس سلسلے میں احتجاج اور دیگر ذرائع استعمال کرنے کی تیاری شروع کردی ہے۔ اس کے برعکس وزیراعطم یوسف رضا گیلانی کے مشیر برائے آئی ٹی و ٹیلی کام سردار لطیف کھوسہ کا کہنا ہے کہ یہ خبر بےبنیاد ہے۔

3) مائیکرو سوفٹ، انٹرنیٹ ایکسپلورر کے نئے ورژن 9 سے کافی پرامید ہے اور بہت دعوے کیے جارہے ہیں۔ لیکن دلچسپ بات یہ ہے کہ مائیکرو سوفٹ کا سب سے کامیاب اور پسند کیا جانے والا آپریٹنگ سسٹم ونڈوز ایکس پی، آئی ای 9 (فائنل ریلیز) کو چلانے کی صلاحیت نہیں رکھے گا۔ آئی ای 9 کے لیے ونڈوز وسٹا، ونڈوز 7، ونڈوز سرور 2008 کی سپورٹ رکھی گئی ہے۔

4) ایک اطالوی ویب سروس نے ایک ایسا سوفٹ ویئر الگورتھم لانچ کیا ہے جو آٹو میٹک طریقے سے ملازمین کو کسی بھی فرم یا آفس میں بھرتی کرے گا انہیں تنخواہیں دے گا اور خراب کارکردگی پر ملازمت سے بھی فارغ کرنے کی صلاحیت رکھے گا۔ اس کے ساتھ ساتھ وہ اپنے ورکرز کے ساتھ مختلف امور پر تبادلہٴخیال بھی کرے گا۔ عام طور پر یہ ویب سائیٹ مختلف کمپنیوں کو فورم فراہم کرتی ہے۔ یہ سوفٹ ویئر ملازمت کا اشتہار اور موصول درخواست اور اہلیت کو مدنظر رکھتے ہوئے جاب کے لیے درخواست بھیجنے والے کا چناؤ کرے گا اور اس کے لیے تنخواہ بھی خود سیٹ کرے گا۔ اس ویب سائیٹ کے رکن میٹ بیری کا کہنا ہے کہ گزشتہ آٹھ سالوں سے انسان ہی اس سافٹ ویئر کو کنٹرول کررہے تھے لیکن اب ہم نے وہ سطح متعارف کروائی ہے جہاں سافٹ ویئر انسانوں کو کنٹرول کریں گے۔ یہ سارا کام بغیر انسانی مداخلت کے ہوگا اور ملازمت طے ہونے کا سارا مرحلہ سوفٹ ویئر ہی مکمل کرے گا۔