حسرت ان غنچوں پہ ہے از عائشہ مزمل

یارو.... دلدارو !
کوئی تو میرے " درد کی دوا" کرو ؟ کوئی تو بتائے میں کیسے ڈائیٹنگ کروں؟
جب بھی کوشش کروں ایک نئی ہی کہانی بن جاتی ہے۔ لو اب سنو، میری داستان امیر حمزہ۔۔۔۔۔

آہا جی " 12 اپریل" ۔۔۔۔۔۔۔۔۔ بڑی ڈراؤنی تاریخ تھی کہ اس دن سے ڈائیٹنگ کا دوسرا سیشن شروع ہونا تھا۔ جبکہ میں نے پہلا سیشن بھی اسی "دوسرے" کے انتظار میں چھوڑ دیا تھا۔
روزانہ کیلینڈر دیکھتی اور سوچتی کہ اف صرف "10 دن" باقی رہ گئے، جو کھانا ھے جلدی جلدی کھا لوں "کیک پزا، حلوہ، گلاب جامن " پھر تو دو ہفتے کی ڈائیٹ ہی ہو گی ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ یم یم صرف دو ھفتے کی ڈائٹ اور پھر میرا "5 کلو وزن " کم۔۔۔ (واہ واہ
میں نے خود کو تصور میں کسی ماڈل کی طرح کیٹ واک کرتے پایا ہی تھا کہ اچانک پیر لڑکھڑا گیا اور میں ڈائٹ کی تلخ دنیا میں واپس پلٹ آئی)
جیو کائنات، واہ میرا دیرینہ خواب پورا ھونے میں کچھ دن ھی باقی ھیں۔ چلو اپنا وزن تو چیک کر لوں پہلے کہ کتنا ھے ؟ اوھو 63 کلو توبہ توبہ۔۔۔۔۔!
کوئی بات اب ان شااللہ میں اسکو صرف دو ہفتے میں 58 پر لے تو آؤں گی۔
شائد میرے ساتھ بھی کوئی آمنہ یا جیا جیسا معجزہ ھو جائے اور میں بھی 15 پاؤنڈ لوز کر لوں۔۔۔۔۔۔ آہا پھر تو" پانچوں انگلیاں گھی میں اور سر کڑاھی میں"۔۔۔!
(لا حول ۔۔۔۔۔۔۔اوھو محاروے بھی وزن بڑھانے والے ہی یاد آتے ہیں۔)
ھاں جی آپ سمجھ گیے ھونگے کی میں کس کی بات کر رھی ھوں ؟
جی یہ میں ھی ہوں ۔۔۔۔۔
نام ۔۔۔۔۔۔۔ مس نزاکت
عمر۔۔۔۔۔۔ (آھم) 16 سال اور "چند ماہ"
قد۔۔۔۔۔۔۔۔۔(آھم) 4 فٹ سے بھی اونچا
وزن ۔۔۔۔۔۔ اور یہاں آ کر بس آہ بھر کر رہ جاتی ھوں۔

کائنات نے ھم جیسے "ذرا سے ہیلتھی" (بقول ساحرہ کے) لوگوں کو ایک خواب دیکھایا، جسکی تعبیر کئی ممبران نے پا لی ۔ اور ھم جیسے صرف آہیں بھرتے رہ گئے ۔۔
میں نے پہلی بار حسرت سے دیکھا اور شامل نہ ھوئی۔ ڈایٹنگ کے نام سے ھی میری روح فنا ھو جاتی ھے ۔۔۔ جھرجھری سی آتی ھے ۔۔۔۔
لیکن سب کا اتنا اچھا رزلٹ دیکھ کر میں نے ھمت پکڑی، میاں جی سے کہا اس بار میں ضرور ڈائٹنگ کرونگی، آخر روزہ بھی تو رکھتی ھوں نہ ۔۔۔۔اس ڈائٹ میں تو کھانا بھی ٹھیک ٹھاک ھے۔
بس جی اللہ کا نام لے کر میں سب سے پہلے نام لکھوانے والوں میں میں بھی شامل ھو گئی۔ اب خوشی خوشی روز ویٹ کرتی کہ کب 12 اپریل آئے گی اور میں جادو سے اسمارٹ ھو جاؤں گی ۔۔۔ میں نے ہفتے کو ہی ساری گروسری کر لی تھی میاں سے کہا بہت سارا پھل لے آنا۔

آخر وہ شہکار آگیا جسکا تھا انتظار"۔۔۔۔۔۔۔"12 اپریل" کا سورج طلوع ھوا میں نے خوشی خوشی میاں کو 2 انڈے 4 سلائس چائے کا ناشتہ دیا اور خود "کالی ،پتلی، بھجنگ چائے اور سوکھا توس " لیا اور کھا پی لیا۔ بچے اٹھے انکو ناشتہ دیا۔
11 بج گئے، میں خوش تھی کہ ڈائٹنگ بہت اچھی جا رھی ھے ۔ایک سیب کھایا پانی پیا۔
1 بجے بڑے اہتمام سے اپنے لئے دال مونگ بنائی (زیادہ بنائی کہ کل پرسوں بھی کام آجائے گی) پیالہ بھر کہ سلاد بنایا (کہ جب دل کیا کھا لوں گی آخر سب کی آزمودہ ٹپس تھیں) بہت "شوق"سے تناول فرمایا۔
سب کچھ ٹھیک جا رھا تھا لیکن خوشیوں کو اپنی ہی نظر بھی لگ جاتی ھے کبھی کبھی۔۔۔۔۔
بچوں کو پراٹھا بنا کر دیا لیکن انکے "مزاج پہ پورا نہ اترا"، سوچا چکھوں تو "بس پھر کیا۔۔۔؟ وہ میرے "معدے " میں چپکے سے اتر گیا اور مجھے پتہ بھی نہ چلا۔۔۔۔
شام کو کچھ مہمان آئے۔ میں نے معذرت کی کہ میں تو ڈائیٹ پہ ہوں ساتھ نہیں دے سکتی۔ خیر جی انہوں نے میری ہمت کی بہت داد دی اور کھا پی کے چلے گئے۔
میں کھانا جلدی کھاتی ھوں تو سوچا تھوڑی سی بغیر آئل کے گریوی بنا لیتی ھوں تو بڑے "پریم اور چاؤ" سے پکایا اور مزے سے کھایا اور سوچا " واہ یہ تو میں روز کھا سکتی ھوں" ۔
بڑے بیٹے نے آلو والے پراٹھے کی فرمائش کی ۔۔۔ بڑا کرسپی گولڈن سا تھا ۔ "ایک بائٹ" ھی لی تھی بس "لیکن آھم ۔۔۔ اسکے بعد صبر نہ ہو سکا اور۔۔۔۔۔
رات کو میاں کے لئے آلو گوشت بنایا ۔۔ نئی ترکیب تھی۔ بالکل دیگ جیسا ٹیسٹ آئے گا ۔ تو "بس" یہ دیکھنے کے لئے کہ دیگ جیسا ذائقہ کیسا ہوتا ھے "چکھتے چکھتے" ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ مزید آدھی ۔۔۔ روٹی۔۔۔۔۔۔۔۔"آھم آھم "۔۔۔۔۔۔باقی۔۔۔ اب اپنے منہ سے کیا تعریف کروں اپنی۔۔۔۔۔۔۔ "آپ لوگ خود سمجھدار ھیں "کہ وہ آدھی روٹی کہاں گئی؟
شام کو میاں گھر آئے چائے کی فرمائش ھوئی، میں بھی شوق سے پیتی ھوں۔ تو چائے کے ساتھ انکو اپنی ڈائٹنگ کا حال سنایا۔ اور کہا کہ میں آج تو نہیں کر سکی میرا خیال ہے کل یہی پہلا دن دوبارہ شروع کرونگی ۔۔۔۔۔۔
یہی عزم لےکر سو گئی۔۔۔۔ صبح ھوئی ناشتہ ٹھیک کیا، آج پکا ارادہ تھا کہ کوئی غلطی نہیں کرونگی ۔۔۔۔ درس کا دن تھا، میں نے سوچا وائیٹ سوس کے ساتھ پاسٹا بنا لیتی ھوں۔ تو کام شروع کیا ۔۔۔۔ سب کچھ ٹھیک جا رھا تھا ۔۔۔۔
ذرا نمک تو "چکھ" لوں ۔۔۔ کہیں وائٹ سوس کا "ٹیسٹ عجیب تو نہیں " بن رہا کہتے کہتے بلکہ چکھتے چکھتے ایک پیالی پاسٹا۔۔۔ بھی ۔۔ کھا گئی۔
بس جی ۔۔۔۔
"اب کوئی بتلائے کہ ھم بتلائیں کیا"۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔؟
باقی "آپ لوگ خود سمجھدار ھیں"۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ اب میں آگے ڈائٹنگ کروں؟۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ یا یہ تکلف رہنے ہی دوں؟ "

۔۔۔۔۔ ۔۔۔۔ ۔۔۔۔ ۔۔۔۔۔۔