003 - اسٹیٹک الیکٹرسٹی(Static Electricity) تحریر: امان

اسٹیٹک الیکٹریسٹی (Static Electricity)

آپ نے یہ نام تو سنا ہی ہوگا، جس طرح ہوا نظر نہیں آتی، اسی طرح یہ بھی دکھائی نہیں دیتی۔ مگر بہت سی چیزیں اس کا احساس دلاتی ہیں جیسے سردیوں میں ریشمی کپڑے، اور سوئٹر میں چرچراہٹ اور آسمانی بجلی کی چمک وغیرہ۔ جب ایک چیز کو دوسری شئے پر رگڑا جاتا ہے تو اس میں برق سکونی (Static Electricity) پیدا ہوتی ہے۔ اور اس سے جو قوّت پیدا ہوتی ہے اسے چارج کہا جاتا ہے۔ چارج کی خاصیت ہے کہ یہ اپنے سے مختلف / الٹ چارج کو کشش کرتا ہے اور اپنے جیسے چارج کو دور کرتا ہے۔

آئیے برق سکونی کا چارج دیکھنے کے لیے ایک الیکٹرو اسکوپ بناتے ہیں اور پھر مثال کے ذریعے دیکھتے ہیں:

کیا کیا چیزیں درکار ہوں گی

* شیشے کا چھوٹا سا مرتبان جو کم از کم چھ انچ اونچا ہو۔

* کپڑے لٹکانے والے ہینگر کا تار۔

* المونیم کی باریک پرت یا پنی جو سات سینٹی میٹر لمبی اور ایک عشاریہ پچیس سینٹی میٹر چوڑی ہو۔ (سگریٹ یا چائے کے پیکٹ سے حاصل کی جا سکتی ہے۔)

* بڑی کنگھی یا بڑا غبارہ۔

* موٹا گتہ۔

* المونیم پرت کا ٹکڑا جو آسانی سے مڑ سکے۔

* ٹیپ۔

* گوند (گلو) جو لکڑی وغیرہ میں کام آتی ہے۔

* پلاس۔

تیاری

ہینگر کے تار کا پندرہ انچ سیدھا ٹکڑا کاٹ لیں، اس کا ایک سرا دو انچ کے قریب اس طرح سے موڑیں کہ وہ Right Angle جیسا زاویہ بن جائے۔ ایسے L

اب مرتبان کو الٹا کر کے اس کا منہ موٹے گتہ پر رکھ دیں اور گتے پر مرتبان کے منہ کے برابر دائرہ بنا لیں اور پھر اس دائرے کو احتیاط سے کاٹ لیں۔ پھر اس کٹ پیس کے عین وسط میں پنسل یا کسی بھی چیز سے چھوٹا سوراخ کر دیں اور اس میں ہینگر کا تار گزار دیں۔

اب المونیم کی پنی کو درمیان سے موڑ کر اسے تار کے مڑے ہوئے حصّے پر کچھ اس طرح رکھیں کہ پنی کے دونوں حصّوں کا رخ نیچے کی جانب ہو، بالکل ایسے ^ معمولی سی ٹیپ کے ذریعے اس کو چپکا بھی سکتے ہیں اس تار سے۔

اب کٹے ہوئے گتے کے کناروں پر گوند (گلو) لگا کر اسے مضبوطی سے مرتبان کے منہ پر چپکا دیں۔ پھر گلو خشک ہونے کے بعد المونیم کے پرت کے ٹکڑے کو مضبوطی سے موڑیں اور اسے گیند کی شکل میں بنا لیں، جس طرح کاغذ موڑ کر گیند کی سی شکل بنا لی جاتی ہے۔ اب اس گیند کو تار کے اگلے (مرتبان کے باہر والے) سرے پر جما دیں۔

تجربہ

پلاسٹک کے کنگھے کو اپنے بالوں یا سوئٹر پر اچھی طرح رگڑیں۔ اب دھیرے دھیرے اسے المونیم کے گولے (گیند) کے قریب لائیں۔ جیسے ہی کنگھا المونیم سے ٹچ / مس ہوگا، تار کے سرے پر رکھی ہوئی المونیم کی پنی پرندے کے پر کی طرح کھلے گی۔ اس طرح ہمیں یہ معلوم ہوجائے گا کہ کنگھے میں برق سکونی موجود تھی۔

نوٹ: اگر ہوا میں نمی زیادہ ہوئی تو یہ عمل کارگر ثابت نہیں ہوگا، کوشش کریں کہ خشک جگہ پر کریں۔

ایسا کیوں ہوا

الیکٹرو اسکوپ میں مختلف اور ایک سے چارجوں کی کشش اور قوّت دفع کا مظاہرہ دیکھتے ہیں۔ جب آپ نے کنگھے کو رگڑا تو اس میں منفی چارج آ گیا، جو تار سے ہوتا ہوا آخری سرے پر پہنچا تو المونیم کی پنی کے دونوں سروں پر یکساں چارج آ گیا۔ اور ایک جیسے چارج ہونے کی وجہ سے پنی کے دونوں سرے ایک دوسرے کو دور / دفع کرتے ہیں۔