005 - سائنس کی باتیں تحریر : امان

سائنس کی باتیں

* لیونارڈو ڈاؤنسی نے اب سے پانچ سو برس قبل بہت سی حیرت انگیز ایجادات کے ڈیزائن پیش کیے تھے، وہ عکسی لکھائی کا ماہر تھا۔ اس کے بنائے ہوئے خاکوں میں پیرا شوٹ، لائف جیکٹ، پیراکی کا لباس، واٹر پمپ، عدسہ ڈھالنے کی مشین، مشین گن، ہوائی جہاز، ہیلی کاپٹر اور آبدوز وغیرہ شامل ہیں۔

* جرمنی کے ماہرِ فلکیات جوہانس کیپلر پہلا شخص تھا جس نے سائنسی اصول کے تحت دوربین اور روشنی کو سمجھا اور استعمال کرنا سیکھا۔ مگر کمال کی بات یہ رہی کہ اُس وقت تک خود اس کی نظر اتنی کمزور ہو چکی تھی کہ دوربین اس کے کسی کام نہ آ سکی۔

* نیوٹن سے جب یہ پوچھا گیا کہ آپ اتنی ساری دریافتوں اور خیالات پر کس طرح کام کرتے ہیں تو انہوں نے جواب دیا۔ "میں دن رات ان کے متعلق غور کرتا رہتا ہوں۔"

* نیوٹن اور سیب کی کہانی بہت مشہور ہے، مگر وہ نصف سچائی پر مبنی ہے۔ اصل واقعہ کچھ یوں تھا کہ۔ "شام کے وقت نیوٹن باغ میں بیٹھا تھا، اس وقت آسمان پر چاند ہلال کی شکل میں موجود تھا۔ اتنے میں ایک سیب زمین پر آ گرا۔ تو نیوٹن یہ سوچتا رہا کہ سیب کے گرنے میں جو قوّت لگی ہے کیا وہی قوّت چاند پر بھی اثر انداز ہو رہی ہوگی۔" باقی یہ بات کہ سیب نیوٹن کے سر پر گرا تھا، درست نہیں۔

* ایڈیسن، نیوٹن آئن اسٹائن اور لوئی پاسچر میں یہ بات مشترک تھی کہ چاروں اسکول میں نالائق شاگرد تصوّر کیے جاتے تھے۔ آئن اسٹائن کو استاد نے جماعت سے باہر نکال دیا تھا۔ نیوٹن کی ماں اسے کسان بنانا چاہتی تھی، ایڈیسن کی ماں خود استانی تھیں اور اسکول سے نکالے جانے کے بعد ایڈیسن کو گھر پر پڑھاتی تھیں۔

* روس کے کیمیا دان دیمتری مندلیف نے اپنے تیار کردہ دوری جدول (Periodic Table) میں عناصر کو قطاروں اور کالموں میں تقسیم کیا تھا۔ تقسیم کے عناصر کے جوہری وزن، نقطۂ پگھلاؤ اور دیگر خواص کو بتدریج کمی یا بیشی کے لحاظ سے مرتّب کیا تھا۔ بعد ازاں اس نے دوری جدول میں کچھ خانے خالی چھوڑ دیئے تھے۔ اس نے تین عناصر کی پیشن گوئی کی جو کہ دریافت ہوں گے اور ان خانوں میں فٹ ہوں گے۔ سالہا سال بعد وہ تین عناصر دریافت ہوگئے (گیلیم، اسکینڈم اور جرمینیم)، ان کے خواص بھی وہی تھے جن کی پیشن گوئی مندلیف نے کی تھی۔

* سن 1938ء میں، روئے پلنکٹ نے حادثاتی طور پر ٹیفلون (Teflon) ایجاد کی تھی۔

* اسٹین لیس اسٹیل، سن 1913ء میں برطانیہ کے ہیری بریرلے نے ایجاد کیا تھا۔

* گبریل فیرن ہائیٹ نے سن 1714ء میں پارے کا تھرمامیٹر ایجاد کیا تھا۔

* بیولہا ہنری نامی خاتون نے بہت سی ایجادات کیں، اور اسی بناء پر ان کو "خاتون ایڈیسن" بھی کہا جاتا تھا۔

* دنیا کی پہلی تصویر، فرانس کے جوزف نپشے نے سن 1826ء میں لی تھی۔

* دنیا میں صرف درجن بھر کے قریب افراد کا بلڈ گروپ اے -ایچ (A-H) ہے جو بہت نایاب ہے۔

* کیا آپ کو معلوم ہے کہ بولنے کے مقابلے میں سرگوشی کرنے میں زیادہ صوتی تار کھینچتے ہیں۔