001 - مکتوبِ پنجاب یونیورسٹی: عامر جہاں

جامعہ پنجاب پر ایک مختصر آرٹیکل

تعارف:-
جامعۂ پنجاب پاکستان کی قدیم ترین جامعہ ہے اور برصغیر پاک و ہند میں مسلمانوں کے اکثریتی علاقوں میں قائم ہونے والی پہلی جامعہ ہے۔ یہ 1882 میں قائم ہوئی۔ یہ پاکستان کے ثقافتی مرکز لاھور میں واقع ہے۔ پہلے اس کا کیمپس قدیمی مال روڈ اور انار کلی بازار کے ساتھ ہی تھا۔ انیس سو ستر کی دھائی میں اس کے بہت سے شعبے نیو کیمپس منتقل ہو گئے۔ نیو کیمپس کے اردگرد لاھور کے نئے علاقے تعمیر ہو گئے جو اب شہر کا حصہ ہیں۔ جیسے گارڈن ٹاؤن، فیصل ٹاؤن، جوہر ٹاﺅن وغیرہ۔ نیو کیمپس یا قائد اعظم کیمپس، اولڈ کیمپس(علامہ اقبال کیمپس کے جنوب میں تقریباً ۱۲ کلومیٹر کے فاصلے پر ہے۔) یہ تقریباً 1800 ایکٹر کی ہریالی پر پھیلا ہوا ہے۔ لاھور کی مشہور کینال نے جامعۂ پنجاب کے نیو کیمپس کو دو حصوں میں تقسیم کیا ہوا ہے۔ ایک حصے میں ڈیپارٹمنٹس اور ایڈمن بلاکس ہیں اور نہر کے دوسری طرف ہاسٹلز ہیں۔
http://pakistancriminalrecords.com/wp-content/uploads/2010/07/05-Punjab…

http://upload.wikimedia.org/wikipedia/commons/1/1f/Faisal_auditorium-PU…

جامعۂ پنجاب کا ایک ذیلی کیمپس خانصپور میں بھی ہے، جو کہ تقریباً ۷۰۰۰ فٹ کی بلندی پر ہمالیہ رینج میں ایوبیہ کے نزدیک ہے۔ یہ کیمپس صرف ریسرچ کی سہولیات مہیا نہیں کرتا بلکہ یہ جامعۂ کی فیکلٹی اور طالبعلموں کے لیے غیر نصابی سرگرمیاں بھی مہیا کرتا ہے۔

اب جامعہ پنجاب نے اپنا ایک کیمپس گوجرانوالہ میں بھی شروع کیا ہے جہاں پر چار پروگرام چل رہے ہیں جن میں بزنس ایڈمنسٹریشن، لاء، کامرس اور آئی ٹی شامل ہیں۔ مزید پروگرام بہت جلد شروع کیے جائیں گے۔

لاھور کے پرانے کیمپس کو علامہ اقبال کیمپس اور نئے کیمپس کو قائدِاعظم کیمپس کہا جاتا ہے۔ جو ان کے سرکاری نام ہیں۔ ان چار کیمپسوں کے ساتھ جامعہ پنجاب کی 13کلیات (فیکلٹیاں)، 9 کالج اور 64 سے زائد ڈیپارٹمنٹس، سینٹرز اور انسٹیٹیوٹس ہیں جبکہ اس کے الحاق شدہ کالجوں کی تعداد ۵۰۰ سے زائد ہے۔ جامعہ میں اساتذہ کی تعداد 700 سے زیادہ ہے جو کہ پڑھانے اور ریسرچ میں مشغول ہیں۔ طلباء کی تعداد تقریباً 30,000 ہے۔ سالانہ تقریباً 450000 طالبعلموں کے لیے 350 امتحانات ہوتے ہیں۔
http://i292.photobucket.com/albums/mm34/fawadsyed/miscellaneous/ada.jpg

تاریخ
جامعہ پنجاب کی سینٹ کا پہلا اجلاس شملہ میں ہوا جس میں اس کی بنیاد رکھی گئی۔ یہ برطانوی ہند کی چوتھی جامعہ تھی مگر پچھلی تین جامعات صرف امتحان لیتی تھیں اور جامعہ پنجاب نہ صرف امتحانات لیتی تھی، بلکہ ایک تعلیم دینے کی باقاعدہ جامعہ تھی یعنی جامعہ پنجاب بجا طور پر برصغیر کی پہلی ایسی یونیورسٹی تھی جہاں باقاعدہ طور پر اعلٰی درجہ کی تعلیم دی جاتی تھی۔ اس سے پہلے ممبئی، مدراس اورکلکتہ میں جامعات تھیں۔ یہ ہند کے مسلمان علاقوں کی پہلی جامعہ تھی۔

سہولیات
جامعۂ پنجاب میں عملے اور طالب علموں کے لیے بہت سی سہولیات موجود ہیں جن میں ہیلتھ، ہاسٹلز، لائبریری، ٹرانسپورٹ، اسپورٹس اور بہت سی سہولیات شامل ہیں۔

کلیات جامعہ پنجاب
جامعہ پنجاب میں تیرہ کلیات ہیں جو کچھ یوں ہیں۔
انسانیات و فنونیات (Arts and Humanities)
علوم سلوکیہ و معاشرتی علوم (Behavioral and Social Sciences)
تجارت (Commerce)
معاشیات اور انتظامی علوم (Economics and Management Sciences)
علم التعلیم (Education)
ہندسیات و طرزیات (Engineering & Technology)
اسلامی تعلیمات (Islamic Studies)
قانون (Law)
حیاتی علوم (Life-Sciences)
علم طب و اسنان (Medicine & Dentistry)
علوم الشرقیہ (Oriental Learning)
دوائیات (Pharmacy)
سائنس (Science)