008 - پرچم سبز ہمارا۔۔۔شاعر: اختر ضیائی

انتخاب:

اختر ضیائی

پرچم سبز ہمارا !

ماضی کے حالات
آج بھی سب کو یاد ہیں
جیسے کل کی بات

خلقت شاد ہوئی
غیروں کی سفاک غلامی
سے آزاد ہوئی

گھر گھر جلے چراغ
مل جل کر شاداب کریں گے
یہ خوشیوں کا باغ

اپنا پاکستان
قائد اعظم نے فرمایا
ہے سب کی پہچان

دُھول میں پُھول گئے
قوم کے لیڈر سارے وعدے
جیسے بُھول گئے

نفرت ایک عذاب
جس کے کارن بن گئے اپنے
سارے خواب سراب

مخلص دھوکا کھائیں
لوٹ کھسوٹ کے ماہر ٹولے
مل کر موج اڑائیں

پرچم سبز ہمارا
ہری بھری دھرتی کے اوپر
روشن چاند ستارہ

سدا رہے آباد
اسلامی دستورِ اخوت
ہے جس کی بنیاد !

***